Home / بزنس / ایف پی سی سی آئی کی ناقص پالیسیوں کی بنا پر تاجر برادری اور فیڈریشن پاکستان چیمبرز کے درمیان دوریاں بڑھتی جارہی ہیں : بزنسمین پینل

ایف پی سی سی آئی کی ناقص پالیسیوں کی بنا پر تاجر برادری اور فیڈریشن پاکستان چیمبرز کے درمیان دوریاں بڑھتی جارہی ہیں : بزنسمین پینل

ایف پی سی سی آئی کی ناقص پالیسیوں کی بنا پر تاجر برادری اور فیڈریشن پاکستان چیمبرز کے درمیان دوریاں بڑھتی جارہی ہیں : بزنسمین پینل
وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے ویژن کے مطابق ایف بی آر میں تاجر دوست اصلاحات کی ضرورت ہے : احمد جواد
UBGنے اپنے ذاتی مفادات کی خاطر فیڈریشن کی ساکھ کو تباہ کر کے رکھ دیا آج ہر تاجر رسوا ہو رہا ہے ۔بزنسمین پینل اس مشکل وقت میں تاجروں کے ہر مسئلے پر ان کے ساتھ ہے اور انکے حقوق کے لئے ہر فورم پر آواز بلند کرتا رہے گا : ترجمان

لاہور (پریس ریلیز(بزنس مین پینل نے ایف بی آر کے کاروباری مقامات پربلا اجازت چھاپوں گرفتاریوں اور خوف وہراس پھیلانے پر گہرے غم و غصہ کا اظہار کیا ہے ۔بزنسمین پینل کے ترجمان احمد جواد نے اس موقع پر کہا ہے کہ ایف پی سی سی آئی میں برسر اقتدار گروپ UBG کے لیڈران اپنے ذاتی مفاد کے خاطر اور اپنے کاروبار کے خاطر SRO کے لیے بِک کر ، FBR کی ہر جائز اور نا جائز شرطیں مانےں گے تو تا جر برادری کے مسائل حل نہیں ہونگے بلکہ اسی طرح ان پرناجائز چھاپے پڑئیں گے۔ آج تاجر اپنا حق و حلال کا پیسہ بھی کھو رہا ہے اور رسوا بھی ہو رہا ہے۔جب ملک میں بزنس کمیونٹی کا سب سے بڑا علم بردار ادارہ فیڈریشن پاکستان چیمبرز آف کامرس ہی تاجروں و صنعتکاروں کے لئے آواز بلند نہ کرے ا انکے حقوق کے لئے نہ لڑے توپیچھے کیا رہ جاتا ہے ۔ بزنس کمیونٹی ایف پی سی سی آئی سے گزارش کرتی ہے کہ خدا کے لیے اب اپنی تاجر برادری کا ساتھ دیں اور ان کے لیے آسانیاں پیدا کریں۔ اپنے ذاتی مفاد کو چھوڑ کر پریشان حال تاجروں کی آواز بنیں تاکہ FBR اور باقی اداروں کو تاجر برادری کی آواز بن کر ،نا جائز چھاپوں اور اقدام سے روکا جاسکے۔ بزنسمین پینل کے ترجمان احمد جواد نے آج ایک پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے کہا کہ محض وزیر اعظم کو ایف بی آر کی کارکردگی بارے خط لکھنے سے مسئلہ حل نہیں ہو گا اسکے لئے ٹھوس لائحہ عمل اختیار کرنا پڑے گا۔جب تک فائلرز پر چھاپوں اور گرفتاریوں کی تلوار لٹکتی رہے گی تو نان فائلرز کبھی بھی ٹیکس نیٹ میں داخل نہیں ہونگے۔فائلرز جو پاکستان کی معیشت میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں انکو مثال بنا کر پیش کیا جائے بجائے یہ کہ انکو پریشان کیا جائے اور خوف و ہراس میں مبتلا کیا جائے۔ احمد جواد نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے ویژن کے مطابق ایف بی آر میں تاجر دوست اصلاحات کی ضرورت ہے جیسا کہ سابقہ حکومت کے دور میں بہت سے غیر قانونی اور غیر آئینی ٹیکس لگائے گئے جس کی وجہ سے کاروباری طبقہ پریشانی سے دوچار ہے ۔ انھوں نے کہاکہ نئے پاکستان کے لیے ٹیکس کلچر بہت ضروری ہے موجودہ ٹیکس دہندگان پر مزید ٹیکسوں و دیگر سختیوں کی بجائے ایف بی آر ٹیکس نیٹ میں اضافہ سے ٹیکس دہندگان پر بوجھ کم کرنے کے اقدامات کرے۔انہوںنے کہا کہ تاجر برادری کے تعاون کے بغیر ملکی ترقی ناگزیر ہے اس لیے ایف بی آر میں اصلاحات کے لیے صنعتکار برادری سے مشاورت کی جائے اور ایف بی کی تاجر کش شقوں کو ختم کرنے کے اقدامات کیے جائیں تاکہ صنعتکار و تاجر ملک کی خوشحالی و ترقی کیلئے خوشدلی سے خدمات سرانجام دے سکیں۔

Check Also

روپے کی بے قدری نہ تھم سکی: اوپن مارکیٹ میں ڈالر مزید مہنگا ہوکر150 تک پہنچ گیا

    کراچی: روپے کی مسلسل بے قدری اور ڈالر کی اونچی اڑان کا سلسلہ ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *