Home / بزنس / خواتےن کی معےشت مےں عملی شرکت کے بغےر ترقی کا مقصد حاصل نہےں ہو سکتا،خواتےن کا کاروبار،تعلےم اور دےگر شعبوں مےں کردار قابل ستائش ہے،۔

خواتےن کی معےشت مےں عملی شرکت کے بغےر ترقی کا مقصد حاصل نہےں ہو سکتا،خواتےن کا کاروبار،تعلےم اور دےگر شعبوں مےں کردار قابل ستائش ہے،۔

 

 

اےف پی سی سی آئی کے صدر انجینئردارو خان اچکزئی ویمن چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے بانی و لیڈرخواتین کے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہے ہیں ان کے ہمراہ سارک چیمبر کے سینئر نائب صدر افتخار علی ملک ، ریجنل چیئرمین عبدالرو¿ف مختار،نائب صدر شیریں ارشد خان اور دیگر بھی موجود ہیں۔

لاہور( پ ر )خواتےن کی معےشت مےں عملی شرکت کے بغےر ترقی کا مقصد حاصل نہےں ہو سکتا،خواتےن کا کاروبار،تعلےم اور دےگر شعبوں مےں کردار قابل ستائش ہے،۔اےف پی سی سی آئی میں خواتین کو بھر پور نمائندگی دی جائے گی۔کاروباری خواتین سے اےف پی سی سی آئی قائمہ کمیٹیوں کی ممبرشپ کی مد میں کوئی فیس نہیں لی جائے گئی۔ خواتےن کی ترقی کے بغےر ملک کی ترقی کا خواب پورا نہےں ہوسکتا۔ان خیالات کا فیڈرےشن آف پاکستان چےمبرز آف کامرس اےنڈ انڈسٹری(اےف پی سی سی آئی) کے صدر انجینئردارو خان اچکزئی نے پاکستان کے ویمن چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے بانی و لیڈر خواتین کے اعزاز میں اےف پی سی سی آئی ریجنل آفس لاہور میں منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہاکہ و قت کی اہم ضرورت ہے کہ خواتےن کے لےے کاروبار کا سازگار ماحول پےدا کےا جائے تاکہ نہ صرف وہ ملکی معاشی ترقی مےں کردار ادا کر سکےں بلکہ خود مختا ر بھی بن سکےں ۔ فیڈریشن کی لیڈر شپ خواتین کی راہنمائی کے لئے ہمیشہ کوشاں ہے۔ سارک چےمبر کے سینئر نائب صدر افتخار علی ملک نے کہا کہ پاکستان کی آبادی کا بڑا حصہ خواتےن پر مشتمل ہے اور ملکی ترقی کے کےلئے ان کی تعلےم اور ےکساں مواقع فراہم کرنے کی اشد ضرورت ہے۔پاکستان کی خواتےن کسی طرح بھی صلاحےتوں مےں دوسرے ممالک کی خواتےن سے کم نہےں ہےں،
خواتےن کے پاس تعلےم کے ساتھ ساتھ ہنر بھی موجود ہے۔ نائب صدر و ریجنل چیئرمین عبدالرو¿ف مختار انڈسٹری مےں سرماےہ کاری اور نئی ٹےکنالوجی متعارف کئے بغےر ملکی معےشت کو مستحکم نہےں کےا جا سکتا۔انہوں نے تجاویز دیتے ہوئے کہاکہ بڑے خریداروں کو قائل کیا جائے کہ وہ خواتین کی تیار کردہ پراڈکٹز کو خریدیں،کاروباری خواتین کی قومی اور بین الاقوامی نمائشیوں میں نمائندگی کو ےقینی بنایا جائے۔حکومت کاروباری خواتین کو کم شرح سود پر قرضے فراہم کرئے۔ اےف پی سی سی آئی نائب صدر شیری ارشد خاں نے کہاکہ کاروباری خواتےن سے متعلق معاشی پالےسےوں مےں بہتری کے علاوہ نئی پالےسےاں بھی بنائی جائےں اگر ہم خواتےن کو با اختےار بنانا چاہتے ہےں تو ہمےں ان کی تربےت کے ساتھ ساتھ ان کی حوصلہ افزائی بھی کرنا ہو گی۔خواتےن ملکی ترقی مےں اپنا کردار ادا کرنے کے لےے تےار ہےں مگر خواتےن کو اےک منظم پلےٹ فارم اور راہنمائی کی ضرورت ہے۔ پاکستان کی باصلاحےت خواتےن پوری دنےا مےں اپنی صلاحےتوں کا لوہا منوا رہی ہےں۔ آج پاکستانی خواتےن زندگی کے ہرشعبے مےں اپنی اعلی صلاحےتوں کے بل بوتے پر بہترےن خدمات سر انجام دے رہی ہےں۔اجلاس میں فطرت بلور، فردوسیا فضل،ناہید مسعود،شاہین خان، طاہرہ نسیم،سمینہ فضل،نیمہ انصاری،انیلا خالد،فوزیہ ناہید، فرزانہ بی بی،سیرت فاطمہ،عظمیٰ حسین،رشیدہ ریاض اور دیگر نے کاروباری خواتین کو درپیش مسائل اور ان کے حل کے لےے تجاویز پیش کی۔

Check Also

خیبرپختونخوا کے تمام سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹرز کی ہڑتال

    پشاور: خیبرپختونخوا کے تمام اسپتالوں میں ڈاکٹرز نے ہڑتال کرتے ہوئے ایمرجنسی سروسز کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *