Home / بزنس / مفاہمتی ےادداشت ( اےم او ےو )سے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان باہمی تجارت کو بڑھانے مےں مدد ملے گئی

مفاہمتی ےادداشت ( اےم او ےو )سے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان باہمی تجارت کو بڑھانے مےں مدد ملے گئی

 

 

 

اےف پی سی سی آئی کے رےجنل چےئرمےن چوہدری عرفان ےوسف برٹش چیمبر آف کامرس(بی سی سی ) کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر آدم مارشل کو ایم او یو پر دستخط کرنے کی تقرےب کے موقع پر ایف پی سی سی آئی کی سو ےنئر پیش کر رہے ہیں ان کے ہمراہ نائب صدر زاہد سعید بھی موجود ہیں

 

 

لاہور(پ ر )مفاہمتی ےادداشت ( اےم او ےو )سے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان باہمی تجارت کو بڑھانے مےں مدد ملے گئی، دونوں ممالک میں تجارت کی صلاحیت اس سے کہیں زیادہ ہے لہذا نجی شعبے کو باہمی روابط بڑھاکر تجارت کو فروغ دینا چاہیے۔اےم او ےو کا مقصد دونوں ممالک کی کاروباری برادری کے درمےان تجارتی سرگرمےوں کو بڑھانا اور مارکےٹ رےسرچ کا تبادلہ ہے۔ اےم او ےو کے تحت دونوں ممالک کے درمےاں تجارتی وفود کا تبادلہ بھی ہو گا اور بزنس ٹو بزنس مےٹنگ بھی کروائی جائے گئی۔ ان خےالات کا اظہار فےڈرےشن آف پاکستان چےمبرز آف کامرس اےنڈ انڈسٹری (اےف پی سی سی آئی) کے رےجنل چےئرمےن چوہدری عرفان ےوسف نے اےف پی سی سی آئی اور برٹش چےمبر آف کامرس (بی سی سی) کے درمےان مفاہمتی ےادداشت کی دستاوےز (اےم او ےو) پر دستخط کرنے کی تقرےب سے خطاب کرتے ہوئے کےا۔فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹر ی (اےف پی سی سی آئی )اور برٹش چیمبر آف کامرس(بی سی سی) کے درمیان دونوںممالک کی باہمی تجارت اور معاشی تعاون کو مز ید فر وغ دینے کےلئے ایک مفا ہمتی یا داشت پر دستخط کیے گئے ہیں ۔ڈاکٹرآدم مارشل،ڈائریکٹر جنرل (بی سی سی ) نے کہاکہ دونوں ممالک کی کاروباری برادری کو آپس مےں بہتر تعلقات رکھنے چاہےں۔ پاکستانیوں کےلئے برطانیہ کے ساتھ تجارت کے وسےع مواقعے موجود ہےں اور ہم ہر ممکن سہولت دےنے کےلئے تیار ہےں،ایم او یو سے تجارتی سرگرمیوں میں مزید اضافہ ہو گا۔ ایف پی سی سی آئی کے نا ئب صدرزاہد سعےد اور اےف پی سی سی آئی پاکستان یو کے بز نس کو نسل کے چیئرمین عمران خلیل نے کہاکہ تجارتی وفود کا تبادلہ باہمی تجارت کے فروغ میں اہم کردار ادا کرتا ہے،دورے کا مقصد پاکستان اور برطانےہ کے درمےان دو طرفہ تجارت کو بڑھانا ہے ۔ دونوں ممالک کو اےک دوسرے کے اور قرےب آنے کی ضرورت ہے اور تجارتی حجم کو مزےد بڑھانے کی ضرورت ہے ۔ عرفان یوسف نے مزید کہاکہ برطانیہ پاکستان کا غیر ملکی براہ راست سرمایہ کاری کا تیسرا سب سے بڑا ذریعہ ہے۔ دونوں ممالک کے تاجروں کو باہمی روابط بڑھانے چاہئیں، دونو ں ممالک کو تجارت و سرمایہ کاری کے متعلق معلومات کا بروقت تبادلہ یقینی بنانا چاہیے۔

۔

Check Also

فرانس کے سابق تجارتی ایڈوائزر مائیکل سیکولیس کا اپنی مسزچانٹل کے ہمراہ چنیوٹ کا دورہ

فرانس کے سابق تجارتی ایڈوائزر مائیکل سیکولیس کا اپنی مسزچانٹل کے ہمراہ چنیوٹ کا دورہ ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *