تازہ ترین خبریں
Home / تعلیم / ننگر پارکر میں واقع خواتین کا پرائمری اسکول علم کی روشنی بانٹنے کیلئے کوشاں

ننگر پارکر میں واقع خواتین کا پرائمری اسکول علم کی روشنی بانٹنے کیلئے کوشاں

 

صوبہ سندھ کے صحرائی علاقے تھر کی تحصیل ننگر پارکر میں قائم خواتین کا پرائمری اسکول انہیں علم کی روشنی بانٹنے کے لیے کوشاں ہے۔تھر کی خواتین گھر کے کام کاج نمٹا کر اسکول جاتی ہیں اور وہاں لکھنے، پڑھنے کے ساتھ جدید ٹیکنالوجی سے واقفیت بھی حاصل کرتی ہیں۔26 سالہ پروین کوہلی بھی اس اسکول کی طالبہ ہیں، پروین شادی شدہ ہیں اور تھرپارکر کی دیگر خواتین کی طرح گھر کے روز مرہ کے معمولات نمٹانا ان کی بھی ذمہ داری ہے، مگر حصول علم کی طلب انہیں اسکول لے آئی ہے۔ڈاکٹر اللہ نواز سموں نے اس حوالے سے بتایا کہ اس اسکول کے اوقات کار ایسے ہیں کہ یہاں کی خواتین آسانی سے آکر تعلیم حاصل کرسکتی ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ خواتین خود یہ اسکول چلا رہی ہیں۔ننگر پارکر کے علاقے پورن واہ میں قائم اس اسکول میں 28 ایسی خواتین ابتدائی کلاسوں میں زیر تعلیم ہیں جن کی عمریں 18 سے 35 سال تک ہے۔حصول علم کے لیے ان خواتین کا جوش و جذبہ مثالی ہے، جسے ان کی روزمرہ کی مشکل زندگی بھی مات نہیں دے سکی۔

Check Also

سندھ کے تعلیمی اداروں میں موسمِ گرما کی تعطیلات31 جولائی تک بڑھانے کا فیصلہ

  کراچی: صوبائی محکمہ اسکولز ایجوکیشن سندھ نے موسمِ گرما کی تعطیلات 31 جولائی تک بڑھانے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *