Home / جرائم / نواحی قصبہ کھرڑےانوالہ میں با اثر چودھرےوں نے پندرہ سالہ گھریلو ملازمہ کو مبینہ زےادتی کے بعد قتل کر ڈالا ۔ ذ

نواحی قصبہ کھرڑےانوالہ میں با اثر چودھرےوں نے پندرہ سالہ گھریلو ملازمہ کو مبینہ زےادتی کے بعد قتل کر ڈالا ۔ ذ

 

 


جڑانوالہ(تحصےل رپورٹر) نواحی قصبہ کھرڑےانوالہ میں با اثر چودھرےوں نے پندرہ سالہ گھریلو ملازمہ کو مبینہ زےادتی کے بعد قتل کر ڈالا ۔ ذرائع کے مطابق چکنمبر73رب کے رہائشی محمد جمیل کی پندرہ سالہ بیٹی مسکان گاﺅں ہی کے با اثر چودھری کے گھر ملازمت کرتی تھی اور اُس کے پاس ہی رہائش پذیر تھی ۔ ایک روز قبل مسکان کی اچانک طبعےت بگڑ گئی اور اُس نے قے کرنا شروع کردےں ۔ چودھری سعید اور اُسکے ساتھےوں نے مسکان کے والدین کو اطلاع دیئے بغےر اُسے مختلف ہسپتالوں میں علاج کروانے کیلئے لے کر گئے اور با لآخر وہ اُسے الائےڈ ہسپتال لے گئے جہاں مسکان کا والد اور ممانی پہنچے اور اُنہوں نے اُسے ملنے کی کوشش کی مگر ہسپتال کے عملہ او ر ڈاکٹروں نے اُن سے بد سلوکی کی اوراُ ُنہیں مسکان سے ملنے نہ دےا۔ جہاں مسکان کچھ دےر موت و حےات کی کشمکش میں رہنے کے بعد خالق حقےقی سے جا ملی مسکان کے والد ین کا موقف ہے کہ چودھری سعےد چونکہ با اثر آدمی ہے اسلئے ہمیں کسی سے انصاف ملنے کی توقع نہ ہے ۔ دوسری طرف ملزمان کا موقف ہے کہ پندرہ سالہ مسکان کو فوڈ پوائزن کی شکاےت ہوئی تھی جس سے وہ جاں بحق ہو گئی ۔ پولیس تھانہ کھرڑیانوالہ کے تفتےشی آفےسرسب انسپکٹر رضوان کا کہنا ہے کہ پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کر لیا ہے تا ہم اصل حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد سامنے آئےں گے ۔ ابھی تک پولیس نے ایف آئی ار میں نامزد کسی ملزم کو گرفتار نہیں کیا ۔

Check Also

سجاول کے قریب اٹھائیس سالہ نوجوان منہ میں کینسرکی وجہ سے موت وزندگی کی کشمکش میں مبتلاہوگیاہے ا

  سجاول:سجاول کے قریب اٹھائیس سالہ نوجوان منہ میں کینسرکی وجہ سے موت وزندگی کی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *