Home / بزنس / ون روڑ ون بےلٹ منصوبے مےں پاکستان اہم پارٹنر ہے،پاکستانی کاروباری برادری کواےف پی سی سی آئی اور ٹرےڈ باڈےز کی سفارش پر فوری چین کا وےزا مل جانا چاہیے۔

ون روڑ ون بےلٹ منصوبے مےں پاکستان اہم پارٹنر ہے،پاکستانی کاروباری برادری کواےف پی سی سی آئی اور ٹرےڈ باڈےز کی سفارش پر فوری چین کا وےزا مل جانا چاہیے۔

 

 

لاہور( پ ر ) ون روڑ ون بےلٹ منصوبے مےں پاکستان اہم پارٹنر ہے،پاکستانی کاروباری برادری کواےف پی سی سی آئی اور ٹرےڈ باڈےز کی سفارش پر فوری چین کا وےزا مل جانا چاہیے۔ چےن پاکستان کا بڑا ٹرےڈ پارٹنر ہے دونوں ممالک مےں متوازن تجارتی حجم کی اشد ضرورت ہے،پاکستان کی چین سے امپورٹ بڑھتی جار ہی ہے اور اےکسپورٹ کم ہو رہی ہے۔دونوں ممالک کو تجارت و سرمایہ کاری کے متعلق معلومات کا بروقت تبادلہ یقینی بنانا چاہیے۔۔کاروبار کے لیے موزوں ماحول پیدا کرنے کے لیے دونوں ممالک کے نجی شعبہ کو بھی فعال ہونا ہوگا۔ ان خےالات کا اظہار فےڈرےشن آف پاکستان چےمبرز آف کامرس اےنڈ انڈسٹری (اےف پی سی سی آئی) کے رےجنل چےئرمےن چوہدری عرفان ےوسف نے چےن مےں پاکستان کے کونسل جنرل ڈاکٹر علی احمد آرائےں کی طرف سے اےف پی سی سی آئی کے وفد کے اعزاز مےں دئےے گئے عشائیہ کے موقع پر کےا۔عشائےہ مےں گورنمنٹ آفشےلز کے ساتھ ساتھ چےن مےں موجود پاکستانی کاروباری برادری نے بھی شرکت کی۔ پاکستان کے گوانگژو،چےن مےں کونسل جنرل ڈاکٹر علی احمد آرائےں نے کہاکہ سی پےک پاکستان کے لئے گےم چےنجر ثابت ہو گا اور جلد ہی ملک مےں خوشحالی آئے گی اور بے روزگاری ختم ہو جائے گی۔ پاکستانی کاروباری برادری کےلئے چےن کے ساتھ تجارت کے وسےع مواقعے موجود ہےں اور ہم ہر ممکن سہولت دےنے کےلئے دن رات کوشاں ہےں۔ انہوں نے کہا کہ تجارتی وفود کا تبادلہ بھی باہمی تجارت کے فروغ میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔ہمارے ملک پاکستان کی بنی ہوئی لےدر اور ٹےکسٹائل پروڈکٹ بھی بہت اچھی ہے،ہمےں اےف پی سی سی آئی معلومات دےں ہم پاکستانی کاروباری برادری کو چےن مےں اےکسپورٹ کرنے مےں ہر ممکن مدد فراہم کرئے گئے۔انہوں نے مزےد کہاکہ وفود کے تبادلوں سے دونوںدوست ممالک کی کاروباری برادری کو مزےد اپنے قرےب لانے اور اےک دوسرے کی رےسرچ سے فائدہ اٹھانا مےں مدد ملے گئی۔ امپورٹ سے متعلق پاکستانی کاروباری برادری کی شکاےات کو بھی زےر بحث لاےا گےا اور اس کے حل کے لئے تجاوےز پےش کی گئےں۔ اس موقع پرعرفان ےوسف نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمےان امن، بھائی چارہ اور تجارت بہت وسےع ہے ۔ سی پےک جےسا مےگا پروجےکٹ جس کی بہترےن مثال ہے۔ انہوں نے مزےدکہا کہ پاکستان چین کو بہت سی مصنوعا ت اےکسپورٹ کرتا ہے جن مےں چمڑا، چمڑے کی مصنو عات، خام اون،سوتی کپڑا، کپڑے کی دےگرمصنوعات ، چینی، مچھلی،راب، خام کرومےم کے علاوہ پٹرولےم اور پٹرولےم کی مصنوعات شامل ہےں۔کاروبار کے لیے موزوں ماحول پیدا کرنے کے لیے دونوں ممالک کے نجی شعبہ کو بھی فعال ہونا ہوگا۔دونوں ممالک میں تجارت کی صلاحیت اس سے کہیں زیادہ ہے لہذا نجی شعبے کو باہمی روابط بڑھاکر تجارت کو فروغ دینا چاہیے۔

Check Also

جولائی اگست؛ براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 40 فیصد کمی

کراچی:  ملک میں سیاسی بے یقینی اور نئی حکومت کو درپیش معاشی مشکلات کے باعث ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *