Home / کالم / ٹنڈوسومرو

ٹنڈوسومرو

 

ٹنڈوسومرو۔۔۔۔۔!
ٹنڈوسومرو صوبہ سندھ اور ضلع ٹنڈو اللہ ےار کا اےک گاﺅں ہے۔ےہ گاﺅں ٹنڈو اللہ ےار سے سات کلو مےٹر شمال مغرب کی طرف واقع ہے۔2010 ء میںاس گاﺅں میں سےلاب آےا اور سےلاب سے بہت زےادہ نقصان ہوا۔ اس گاﺅں کے مکینوں نے ناگہانی آفت میںکسی مددکا انتظار کےے بغےر اپنی مدد آپ کے تحت کام شروع کیا۔سب سے پہلے رےسکیو کاکام کیا اور پھر Rebuilt کا کام شروع کیا۔گاﺅں کے لوگوں نے اےک کمیٹی بنائی اور گاﺅں کے تمام کام خود کرنے کا تہیہ کرلیا۔لوگوں کی کاوشوں سے ٹنڈوسومرواےک مثالی گاﺅں بن چکا ہے۔اس گاﺅں میں چار مساجد ہیں۔ اےک بوائز اور گرلز پرائمری سکول ہے۔پی ٹی سی اےل ایکس چینچ، کھےل کا مےدان،پارک اور دےگر بنےادی سہولےات موجود ہیں۔ اس گاﺅں کے سو فی صد بچے اور بچےاں سکولوں میں داخل ہیں۔بوائز اور گرلز پرائمری سکولوں میں کمپےوٹر لیب سمےت تمام جدےد سہولےات موجودہیں۔ ٹنڈو سومرو میں ہسپتال پبلک سےکٹر کے تعاون سے چلا رہے ہیں ،جہاں چوبےس گھنٹے ڈاکٹر زموجود ہوتے ہےں۔ہسپتال میں اےمبولینس سروس سمےت تمام جدےد طبعی سہولےات مےسر ہےں۔اس گاﺅں میں سورےج کا نظام بہترےن ہے۔سورےج کا نظام زمین دوز ہے۔گلیوں میں بارشی پانی کھڑا نہیں رہتا ہے۔ بارش کا پانی صرف چند منٹوں میں نکاس ہوجاتا ہے۔لوگ گلیوں میں گند ےا کچرا نہیں پھےنکتے ہیں بلکہ ہر گلی میں ڈس بےن لگے ہوئے ہیں۔گلیوں میں گند ےا کچرا پھینکنا معےوب سمجھا جاتا ہے۔ اس کے برعکس آپ پاکستان کے بڑے شہر کراچی اور لاہور کو دےکھےں تو بارش کے بعد سڑکوں پر پانی کھڑا رہتا ہے۔عصر حاضر میں حکومتی اداروں اور لوگوں کی نااہلی کی وجہ سے کراچی گندہ شہر بن چکا ہے۔اسی طرح لاہور کے جن علاقوں میں آسمانی مخلوق ےعنی اےلیٹ طبقہ رہتا ہے ،وہاں صفائی اور نکاسی کا بہترےن نظام موجود ہے لیکن جہاں پر زمینی مخلوق ےعنی غرےب اور درمےانہ طبقہ رہتا ہے ،وہاں پر صفائی اور نکاسی کا نظام اچھا نہیں ہے۔کراچی ،لاہور اور دےگر شہروں میں حکومتی وسائل کے باوجود صفائی وغےرہ کے حالات ابتر ہیں۔حکمران طبقے اور اداروں کی بے حسی دےکھےں کہ تقرےباً 72 سالوں میںکراچی اور لاہور وغےرہ شہروں کے غرےب طبقے والے رہائشی علاقوں کو پینے کا صاف پانی بھی فراہم نہ کرسکے جبکہ خلائی مخلوق والے ےعنی امےر علاقوں میں ہر قسم کی سہولیات موجود ہےں۔ٹنڈو سومرو کے لوگوں کو معلوم ہے کہ سرکاری ادارے بہتر انداز میں کام نہیں کرتے ہیں۔اس لئے انھوں نے کسی کام ےا منصوبے کے لئے منتخب نمائندوں ےا حکومتی اداروں کی طرف دےکھنے کے بجائے گاﺅں والوں نے مختلف کیمٹےاں بنائی ہیں جو مختلف امور سرانجام دےتی ہیں اور لوگوں کو بہترےن سہولےات فراہم کرنے کےلئے کوشاں رہتی ہیں۔ انھوں نے شہرےوں کو کرنٹ سے محفوظ رکھنے کےلئے بجلی کے کھمبوں کو لکڑی کے تختوں سے ڈھانپ رکھا ہے۔وہاں پر لوگ سو فی صد بجلی کے بلز جمع کرتے ہیں۔لوگ بجلی چوری کا تصور ہی نہیں کرسکتے ۔بجلی چوری کی صورت میں25ہزارروپے جرمانہ اورچھ ماہ بجلی منقطع رہنے کی سزا ہے۔ وہاں کے لوگوں نے ڈےڑھ سال میںگاﺅں کے گرد دس فٹ بلند دےوار بنائی ہے ۔ گاﺅں کے مےن گےٹ پر شناخت کے بغےر اندر جانے کی قطعی اجازت نہیں ہے۔اس گاﺅں میں چوری نہیں ہوتی ہے کیونکہ چور کو گاﺅں بدر کیا جاتا ہے۔ٹنڈو سومرو میں اےک زرعی فارم ہے جہاں پرمختلف قسم کے درخت اور پودے ہیں۔زرعی ماہرےن اس فارم میں تحقےق کرتے ہیں۔کسانوں کا بہت خیال کیا جاتا ہے اور ان کو معاوضہ بھی اچھا خاصا دےتے ہیں۔گاﺅں میں بہترےن فصل کی پیداوار پر کسان کو فارمر آف ائےراےوارڈ،25ہزار روپے انعام اور بوسکی پگڑی بطور انعام دےتے ہیں۔وہاں پر کسان بہترےن پیداوار کے لئے سخت تگ ودو اور مقابلہ کرتے ہیں۔مقابلے اور محنت کا خوبصورت ماحول ہے۔ٹنڈو سومرو کے کسانوں کو مطالعاتی دورہ بھی کراتے ہیں۔ مطالعاتی دورے میںڈےڑھ دوسو کسان ہوتے ہیں۔کسان مطالعاتی دورے سے مفےد معلومات حاصل کرتے ہیں ۔وہ فصلوں اور پودوں کے بارے میں سےکھتے ہیں ۔ ان کو دےگر دےہاتوں کے زرعی فارمرز کے ساتھ ساتھ منڈےوں کا دورہ بھی کراےا جاتا ہے تاکہ ان کو مارکےٹنگ کے بارے میں جانکاری ہوسکے۔ مطالعاتی دورے کے اخراجات گاﺅں انتظامیہ برداشت کرتی ہے۔قارئےن کرام!اللہ رب العزت نے وطن عزیز پاکستان کو انتہائی خوبصورت اور زرخیز پیدا کیا ہے ۔اخلاص اور محنت سے کام کیا جائے تو ٹنڈوسومرو کی طرح ہمارا ہر شہر ،قصبہ، اورقرےہ مثالی بن سکتے ہیں۔ہمیں اےک دوسرے کی طرف دےکھنے کے بجائے اس نےک کام میںپہل کرنی چاہےے۔ہمیں اپنے گھر کی طرح گلی، محلے، گاﺅں اور شہر کو صاف رکھنا چاہےے۔کاغذ، شاپر اور بوتل وغےرہ گلیوں، بازاروں اور پارکوں میں نہیں پھینکنے چاہےےں۔سرکاری اداروں کے ملازمین کو بھی کماحقہ فرائض منصبی سرانجام دےنے چاہےیں۔ضرورت اس امرکی ہے کہ ہمیں ٹنڈو سومرو کے باسےوں کی طرح اپنے گاﺅں اور شہر کو رول ماڈل بنا ناچاہےے۔
خالد خان
صحافی و کالم نگار
لب درےا

Check Also

نمک کے پہاڑ۔۔۔

  نمک کے پہاڑ۔۔۔ عمرفاروق /آگہی سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی بنائی ہوئی موٹروے پرسفرشروع ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *