Home / بزنس / ٹیکس ٹو جی ڈی پی کی شرح بڑھانے کے لئے پاکستان کو ٹیکس اصلاحات کی اشد ضرورت ہے : میاں نعمان کبیر

ٹیکس ٹو جی ڈی پی کی شرح بڑھانے کے لئے پاکستان کو ٹیکس اصلاحات کی اشد ضرورت ہے : میاں نعمان کبیر

ٹیکس ٹو جی ڈی پی کی شرح بڑھانے کے لئے پاکستان کو ٹیکس اصلاحات کی اشد ضرورت ہے : میاں نعمان کبیر
انسپکٹر لیس رجیم لاگو ہونے سے ٹیکس نیٹ پر مثبت اثر پڑے گا اور اس نظام کے آنے سے ٹیکس دہندگان کی حوصلہ افزائی ہو گی : پیاف عہدیداران
لاہور(پریس ریلیز)پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسوسی ایشنز فرنٹ (پیاف) نے کہا ہے کہ ٹیکسوں کی تعداد میں کمی اور ٹیکس اصلاحات سے ہی ٹیکس نیٹ میں اضافہ ممکن ہے ۔ ٹیکس ٹو جی ڈی پی کی شرح بڑھانے کے لئے پاکستان کو ٹیکس اصلاحات کی اشد ضرورت ہے ۔ حکومت مالی بحرا ن کے باعث آئی ایم ایف جیسے اداروں سے ان کی شرائط پر قرضے حاصل کرتی ہے جس کے باعث انڈسٹریز اور تاجر برادری پر ٹیکسوں کا بوجھ بڑھتا جارہا ہے۔چیئرمین پیاف میاں نعمان کبیر نے سیئنر وائس چیئرمین ناصر حمید کے ہمراہ گلبرگ آفس میں تاجروں کے وفد سے ملاقات میں کہا کہ تاجر برادری نامساعد حالات کے باوجود ٹیکس ادا کرتی ہے ٹیکس گوشوارے جمع کروانے والوں کی تعداد بڑھنا اس بات کا واضح ثبوت ہے مگر اسکے ساتھ ساتھ ٹیکس دہند گان کو عزت و احترام دیا جائے اور ان لوگوں کو ٹیکس نیٹ میں لایا جائے جو آمدن کے باوجود ٹیکس ادا نہیں کر رہے۔عالمی ادائیگیوں کے حساب سے ہی ٹیکس کی شرح کم از کم رکھ کر ٹیکس نیٹ میں اضافہ کیا جاسکتا ہے۔وائس چیئرمین ناصر حمید نے کہا کہ انسپکٹر لیس رجیم لاگو ہونے سے ٹیکس نیٹ پر مثبت اثر پڑے گا اور اس نظام کے آنے سے ٹیکس دہندگان کی حوصلہ افزائی ہو گی اور دوسرے لوگ بھی ٹیکس نیٹ میں داخل ہونگے۔ انھوں نے کہا حکومت زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ کیلئے ساز گار ماحول فراہم کرے اور بجلی و گیس کی قیمتوں میں کمی اور صنعتوں کو بجلی گیس کی لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ اور ٹیکسوں میں بھی کی جائے تاکہ ملکی برآمدات میں اضافہ ممکن ہوسکے ۔اور زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ سے ملک خوشحالی و ترقی کی راہوں پر گامزن ہوسکے۔

Check Also

کسٹم عدالت کا ایف بی آر کی درخواست پر20 بینک اکاؤنٹس منجمد کرنے کا حکم

    کراچی: کسٹم عدالت نے منی لانڈرنگ اور امریکی ڈالر بیرون ملک بھیجنے کے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *