Home / بزنس / گندم ایکسپورٹ کے لیے بااثر شخصیت کا اسٹامپ فیس سے استثنیٰ کیلیے دباؤ

گندم ایکسپورٹ کے لیے بااثر شخصیت کا اسٹامپ فیس سے استثنیٰ کیلیے دباؤ

لاہور: حکمراں جماعت کے ایک سینیٹ امیدوار اور ایک رکن اسمبلی کے بھائی نے گندم ایکسپورٹ معاہدے کیلیے لازم45 لاکھ روپے مالیت کی اسٹامپ فیس کی ادائیگی سے استشنی حاصل کرنے کیلیے مبینہ طور پر محکمہ خوراک پر دباؤ ڈلوانے کی کوشش کی ہے جبکہ محکمہ خوراک نے اسٹامپ فیس کے ساتھ معاہدہ کی دستاویزات جمع نہ کرانے پر زر ضمانت 1 کروڑ90 لاکھ روپے بحق سرکار ضبط کرنے کا نوٹس بھجوا دیا۔سمندری راستے سے گندم ایکسپورٹ کیلیے 14 درخواست گزاروں کا انتخاب کیا گیا تھا جن میں سے 13 نے محکمہ خوراک کو اسٹامپ فیس اوردیگر شرائط کے مطابق بینک گارنٹیاں اور دستاویزات کے ساتھ معاہدہ جمع کرا کے اسے سائن کرا لیا ہے جبکہ ملتان سے تعلق رکھنے والے ایک درخواست گزار نے محکمہ کو تحریری طور پر 1 لاکھ25 ہزار ٹن گندم ایکسپورٹ کرنے پر رضامندی ظاہر کی تھی اور زر ضمانت بھی جمع کروایا تھا اس نے 45 لاکھ روپے اسٹامپ فیس سے استثنیٰ حاصل کرنے کیلیے محکمہ خوراک پر دباؤ بڑھا دیا ہے۔ذرائع کے مطابق مذکورہ ایکسپورٹر ن لیگ کے ایک رکن اسمبلی کا بھائی ہے اور اس کے ایک بھائی کو سینیٹ کا امیدوار بھی بنایا گیاہے ،محکمہ خوراک نے مذکورہ کمپنی کو نوٹس جاری کردیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ 2 مارچ تک تمام قواعد وضوابط مکمل کریں بصورت دیگر زر ضمانت ضبط کر لیا جائے گا۔

Check Also

حکومت کی معیشت کی بحالی کے لئے آئی ایم ایف پر انحصار کرنے کی بجائے دوست ممالک سے تجاتی معاہدوں اور نرم شرائط پر قرضوں کی بدولت ملک کو بحران سے نکالنے کی کوشیشیں قابل تعریف ہیں : پیاف

    حکومت کی معیشت کی بحالی کے لئے آئی ایم ایف پر انحصار کرنے ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *